بند کریں
شاعری مضامینمضامین
اپنے پسندیدہ شاعر سے متعلقہ مضامین پڑھیں

حالیہ تبصرے

saqlain zaigham 29-11-2016 16:59:27

ثمینہ راجا کی کتاب "ہجر نامہ" منصہ شہود پر نہ آ سکی۔ لیکن کتاب کا ٹائٹل تیار ہو چکا تھا اور پبلشر کے پاس مسودہ بھی پہنچ چکا تھا لیکن ثمینہ راجا کی زندگی نے وفا نہ کی۔ اس لیے یہ کتاب ہنوز چھپی نہیں۔ اسی طرح "خواب گر" بھی خوب ہی رہا اور احمد فراز سے متعلق یہ ادبی میگزین کبھی نہیں چھپا۔

  مزید
سلطان ضیاء 26-09-2016 14:09:09

سحترم عرفان ستار صاحب شکریہ قبول فرمائیے اس تحریر کیلئے۔ کیا غزال و غزل کے ملنے کی کوئی صورت ہے؟

  مزید
عنبر 24-07-2016 00:02:27

کیا مجهے ان کی کتانب "غزال" مل سکتی ہے آن لائن ؟ میں نے بہت ڈهونڈی مگار ڈاونلوڈ نہیں ہوتی کہیں سے بهی--

  مزید
Sardar Majid 08-06-2016 22:23:24

Very good opportunity پہلی دفعہ وزٹ کیا بہت اچھا لگا سرائیکی کی غزل یا رباعیات کو اس طرح ڈیزائن کیجیے کہ کاپی بھی ہو سکیں بہرحال بہت اعلیِ

  مزید
ضیا، اللہ طاہر 12-01-2016 13:54:13

ابھی پہلی بار دیکھا ہے، اچھا لگا ہے۔

  مزید
عاطف نصیر 21-09-2015 16:30:06

تہزیب حافی ابھرتے ہوئے قادرالکلام شاعر ہیں۔ جن اشعار کا انتخاب انہوں نے کیا ہے اس سے انکی خوش ذوقی کا اندازہ بخوبی لگایا جا سکتا ہے

  مزید

مضامین کے مضامین

زبان ہے تو جہان ہے

آج ہم زبان پر کچھ کہنا چاہتے ہیں۔ ہے نا عجیب بات؟ زبان سے یا تو کچھ کہا جا سکتا ہے یا کسی زبان میں کچھ کہا جا سکتا ہے۔ اگر ہم زبان پر کچھ کہیں گے تو آپ زبان پر حَرف لائیں گے۔

ایک خط! ذوالفقار عادل کے نام ( نوید صادق )

ہمارے کچھ مشترکہ دوستوں کا خیال ہے کہ فیس بک پر سامنے آنے والی آراء کی کوئی اہمیت نہیں، لیکن سنجیدہ تخلیقات پر آنے والی آراء سنجیدگی کی حامل ہوتی ہیں۔لگے ہاتھوں اس مضمون پر کچھ آراء دیکھتے چلیں:
’’یہ مضمون نہایت عمدہ ہے، نئے شعرا کی Recognitionکی جانب پہلا قدم‘‘ (رحمان حفیظ)

سراج الدّین ظفر۔ تعارف اور منتخب کلام
تحریر : عرفان ستار

یہ بات بہت سے احباب کے لیے نئی ہوگی کہ ہمارے عہد کے شاعر ِ بے بدل انور شعور باقاعدہ طور پر سراج الدین ظفر کے شاگرد ہیں۔ جس استاد کا شاگرد ایسا باکمال ہو اس کی عظمت میں بھلا کس کو شک ہو سکتا ہے؟

قابل اجمیری

راستہ ہے کہ کٹتا جاتا ہے
فاصلہ ہے کہ کم نہیں ہوتا
وقت کرتا ہے پرورش برسوں
حادثہ ایک دم نہیں ہوتا

فراق گورکھپوری

ان کے متعدد شاعری مجموعے شائع ہوئے جن میں روح کائنات، شبنمستان، رمز و کنایات، غزلستان، روپ، مشعل اور گلِ نغمہ کے نام سرفہرست ہیں۔ حکومت ہند نے انہیں پدما بھوشن اور جنانپتھ کے اعزازات عطا کیے تھے۔

سید علی عباس جلالپوری
تحریر : پروفیسر لالہ رخ بخاری

1986میں پاکستان پنجابی ادابی بورڈ لاہور کی جانب سے انہیں ایوارڈ سے نوازا گیا۔ ان کی دو کتابیں پنجابی ادبی بورڈ نے شائع کی تھیں“وحدت الوجودتے پنجابی شاعری” اور“ساڈے وڈکیاں دی سوجھ”۔ 1989میں انہیں تحریک خرد افروزی کے لئے اعلیٰ پائے کی تصانیف تحریر کرنے پر ایوارڈ سے نوازا کیا۔ یہ ایوارڈ وزیراعظم بے نظیر بھٹو نے دیا۔

احمد فراز ایک عظیم شاعر

کوہاٹ پاکستان میں پیدا ہوئے۔ ان کا اصل نام سید احمد شاہ علی تھا۔ اردو اور فارسی میں ایم اے کیا ۔ ایڈورڈ کالج ( پشاور ) میں تعلیم کے دوران ریڈیو پاکستان کے لیے فیچر لکھنے شروع کیے

زوللفقار عادل کے مجموعہ سے چند منتخب اشعار (ابرار احمد)

ذوالفقار عادل نے زبان کو ایسے برتا ہے کہ تراکیب اور روایت سے زیادہ جڑت نہ ہونے کے با وصف ایک منفرد اور اپنا لب و لہجہ دریافت کر دکھایا ہے .مکالمے کی فضا ، عصری حقیقتوں کے درمیان فرد کی تنہائ اور بے بسی اور جدید زندگی میں در پیش الجھنیں اس کی غزل میں کچھ اس طور ڈھل کر آئ ہیں کہ غزل کی بہ طور صنف ظاہری حدود کی طرف دھیان ہی نہیں جاتا

فاخرہ بتول کا تعارف اور ان کا منتخب کلام

فاخرہ بتول کا شمار اردو ادب کی اہم شاعرات میں ہوتا ہے ۔ آپ کا مخصوص لب و لہجہ اور کیفیت سے بھرپور انداز _ سخن آپ کو باقی شاعرات سے منفرد کرتا ہے۔

گلزار صاحب کا تعارف اور کچھ منتخب کلام

پیدائشی نام سمپورن سنگھ کالرا ہے، مگر شاعری میں گلزار ؔکے نام سے پہچانے جاتے ہیں: رکے رکے سے قدم، رک کے بار بار چلے قرار دے کے تیرے دَر سے بے قرار چلے بہرحال پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد سے لگ بھگ سو کلو میٹر کے فاصلے پر، جی ٹی روڈ کے کنارے ضلع جہلم کا تاریخی قصبہ دینہ ضلع جہلم میں پیدا ہونے والے گلزارؔ بھارت کے مشہور گیت کار بھی ہیں۔مشہور اداکارہ راکھی کے شوہر نامدار ہیں اورایک عدد بیٹی میگھنا گلزار کے باپ ہیں۔ ریشم کا یہ شاعر آج بھی اپنی جنم بھومی سے اتنی ہی محبت کرتا ہے، جیسے آج سے پون صدی پہلے کرتا تھا

اردو کی جدید نظم کے ممتاز شاعر اختر حسین جعفری ( خالد محمود )

اختر حسین جعفری کا شمار‘ جدید اردو شعرا میں ہوتا ہے۔ انہوں نے اردو زبان کو اپنی جدت طبع کے سبب‘ حیرت انگیز استعمالی و معنوی تبدیلیوں سے نوازا ہے۔ ان کی زبان پڑھتے ہوئے عجب لطف اور سرشاری سی میسر آتی ہے۔ یہ بات بہرطور پیش نظر رہنی چاہیے‘ کہ کسی بھی شعر پارے کی اس وقت تک درست تفہیم ممکن ہی نہیں‘ جب تک اس کی زبان کا پوری صحت مندی سے مطالعہ نہ کر لیا جائے

استاد قمر جلالوی کا تعارف اور انکی شاعری سے انتخاب (خالد محمود )

استاد قمر جلالوی کے کلام میں بیان کی برجستگی، اسلوب کی سلاست، ایک چبھتی ہوئی بات کہنے کا انداز اور اس کے ساتھ ساتھ ایک مخصوص قسم کی ڈرامائیت پائی جاتی ہے
فہرست 1 سے 12  تک   (57 ریکارڈز )