جاوید ہاشمی کی دوبارہ مسلم لیگ ن میں شمولیت پر پارٹی رہنما ناراض

مسلم لیگ ن کے ملتان جلسہ کے موقع پر پارٹی کے اندرونی اختلافات سامنے آتے رہے

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین ہفتہ مئی 15:35

جاوید ہاشمی کی دوبارہ مسلم لیگ ن میں شمولیت پر پارٹی رہنما ناراض
ملتان (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 12 مئی 2018ء) : گذشتہ روز پاکستان مسلم لیگ ن نے ملتان میں سیاسی پاور شو کیا جس میں سینئیر سیاستدان جاوید ہاشمی نے دوبارہ مسلم لیگ ن میں شامل ہونے کا باقاعدہ اعلان کر دیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق مخدوم جاوید ہاشمی کی مسلم لیگ ن میں دوبارہ شمولیت پر پارٹی کے اندرونی اختلافات میں مزید اضافہ ہو گیا ہے۔ مسلم لیگ ن کے ملتان میں گذشتہ روز ہونے والے جلسہ کے موقع پر پارٹی کے اندرونی اختلافات سامنے آتے رہے ۔

جلسہ میں کسی قسم کی کوئی بدنظمی نہ ہو اس لیے مئیر ملتان کے بھائی و سابق صوبائی وزیر چودھری وحید ارائیں کو سٹیج پر آکر اعلان کرنا پڑا کہ جلسہ میں نواز شریف،، شہباز شریف اور مریم نواز کے علاوہ کسی بھی مقامی لیڈر یا ایم این اے ، ایم پی اے کا نعرے لگانے سے گریز کیا جائے ۔

(جاری ہے)

مسلم لیگ (ن) کے ملتان سے ممبر صوبائی اسمبلی عباس راں نے جلسے میں شرکت نہیں کی۔

جلسہ میں ناقص انتظامات کی وجہ سے شرکاء کو شدید مشکلات کا سامنا بھی کرنا پڑا۔ جلسہ کی سکیورٹی کے لئے 2656 پولیس افسران و اہلکاران کو تعینات کیا گیا۔اسپیشل برانچ کی طرف سے جلسہ گاہ کی سوئپنگ کی گئی۔۔جلسہ گاہ پہنچنے کے لیے وی آئی پیز کے لیے 4 مختلف روٹس بنائے گئے تھے ۔ نواز شریف سمیت دیگر قائدین کے جلسہ گاہ پہنچنے سے قبل سٹیج پر مئیر گروپ (چودھری وحید ارائیں ) قابض رہا۔

جاوید ہاشمی کی جلسہ گاہ آمد پر سٹیج سیکرٹری چودھری وحید ارائیں نے کہا کہ جاوید ہاشمی کو ان کے اپنے ہی گھر میں خوش آمدید کہتے ہیں۔ دوسری جانب ن لیگ کے ناراض ایم پی اے ملک مظہر عباس راں نے پی ٹی آئی میں شمولیت کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا کہ جو بھی میں نے فیصلے کئے وہ اپنے گروپ اور حلقہ کے باشعور عوام سے مشاورت سے کئے ہیں میں اور شاہ محمود حسین قریشی 1988ء سے لیکر اب تک ایک دوسرے کے سیاسی حریف رہے لیکن اب وقت آ گیا کہ مجھے شاہ محمود کی ضرورت اور شاہ محمود کو میری ضرورت ہے۔