کدھر عمران خان کدھر سعد رفیق میرا بس چلے تو۔۔

میرے بس میں ہو تو آپ کے کان پکڑوا دوں آپ نے عمران خان اور سعد رفیق کا نام ایک سانس میں لے لیا، معروف صحافی حسن نثار کا اینکر سے مکالمہ

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان پیر جون 14:36

کدھر عمران خان کدھر سعد رفیق میرا بس چلے تو۔۔
لاہور(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔25جون 2018ء) معروف صحافی حسن نثار کا کہنا ہے کہ میرا بس چلے تو میں عمران خان اور سعد رفیق کا نام اکھٹا لینے والے کو کان پکڑوا کر دوں۔تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل کی اینکر نے معروف صحافی و تجزنہ نگار حسن نثار سے سوال کیا کہ پی ٹی آئی چئیرمین عمران خان اور ن لیگی رہنما سعد رفیق کے درمیان کڑا مقابلہ ہو گا۔

جس متعلق تجزیہ پیش کرتے ہوئے حسن نثار کا کہنا تھا کہ عمران خان بمقابلہ سعد رفیق سن کر ہنسی آتی ہے۔۔میرا جرمانہ چلے تو میں جرمانہ کر دوں اور میرا بس چلے تو میں آپ کے کان پکڑوا دوں آپ نے عمران خان اور سعد رفیق کا نام ایک سانس میں لے لیا۔ہر بندے کی ایک تاریخ ہوتی ہے۔۔سعد رفیق بھی میرے بھائی کی طرح ہے۔ان کے والد بھی ایک محترم شخصیت تھے۔

(جاری ہے)

لیکن کدھر عمران خان اور کدھر سعد رفیق۔۔حسن نثار کا سردارایاز صادق اور علیم خان کے مقابلے سے متعلق کہنا تھا کہ میں تو سردار ایاز صادق کو بڑا آدمی سمجھتا تھا لیکن یہ تو بگوڑا نکال ہے اور یہ پی ٹی آئی رہنما علیم خان سے ڈرا ہوا ہے۔اور سردار ایاز صادق شکست تسلیم کر چکا ہے۔جب کہ دوسری طرف این اے 134 میں انتخابی مہم کی کارنر میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے خواجہ سعد رفیق نے مخالفین کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہاکہ ایک لٹیرا ہے تو دوسرا نا لائق، لوٹوں اور کراچی کو گندگی کا ڈھیر بنانے والی جماعتیں حکومتیں بنانے کے خواب دیکھ رہی ہیں۔

خواجہ سعد رفیق نے کہا ک اگر مسلم لیگ(ن)کی حکومت کے رستے میں رکاوٹیں نہ کھڑی کی جاتی تو ملک سے اندھیروں کا مکمل خاتمہ ہو چکا ہوتا۔ ملکی معیشت ترقی کے عروج پر ہوتی۔ سابق وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ لیگی کارکن پچیس جولائی کو شیر پر مہر لگا کر تمام سازشوں اور مہروں کا راستہ تمام کر دیں گے۔ آئندہ حکومت بھی مسلم لیگ (ن)کی ہوگی۔انہوں نے کہاکہ پہلے ہی کہا تھا کہ اگر عمران خان میرے حلقے سےالیکشن لڑے گا تو الیکشن لڑنے کا مزہ آئے ، عمران خان کو بھاگنے نہیں دوں گا ۔ عمران خان سمجھتے ہیں کہ نئی حلقہ بندیوں سے فتح ہوجائے گی جبکہ آخری فتح اصولوں کی سیاست کی ہوگی ۔