اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

حکومت کا ”انرجی ایفیشینسی فنڈ“ قائم کرنے کا فیصلہ کر لیا:
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔27جولائی۔ 2009ء) حکومت نے ملک میں توانائی کمپنیوں کی استعداد کو بڑھانے اور بجلی کی تقسیم کے نظام کو بہتر بنانے کیلئے ”انرجی ایفیشینسی فنڈ“ قائم کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے ۔ ایشیائی ترقیاتی بنک اس کیلئے مالی معاونت فراہم کرے گا۔ وزارت پانی و بجلی کے ذرائع نے بتایاکہ اس فنڈ کے قیام کا مقصد ملک میں بجلی کے بحران پر قابو پانے کی کوششوں کو مزید تیز تر کرنا ہے ۔ ذرائع نے بتایا کہ اس فنڈ کی معاونت سے بجلی کے مختلف پلانٹوں کی مرمت کرکے انہیں نئے پلانٹوں کے نظام میں مربوط کرنا ہے تاکہ رواں سال کے آخر تک بجلی کے بحران پر قابو پانے کے ہدف کو آسانی سے حاصل کیا جاسکے ۔ نئے اور پرانے پلانٹوں کو مربوط کر کے رواں سال کے آخر تک 3 ہزار 600 میگاواٹ بجلی حاصل کی جاسکے گی۔ اس کے علاوہ جولائی 2007ء میں 1200 میگاواٹ کے مزید نئے پلانٹ بھی کام کرنے لگیں گے جس سے بجلی کے نظام پر بوجھ کم ہوسکے گا۔ ذرائع نے کہا کہ بجلی کی طلب اور رسد کے درمیان فرق کو ختم کرنے کیلئے جنگی بنیادوں پر کام جاری ہے ۔

27/07/2009 18:57:19 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے