اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

راولاکوٹ آزاد کشمیر میں بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ کے خلاف دوسرے روز بھی مکمل شٹر ڈاون اور پہیہ جام ہڑتال:
راولاکوٹ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین ۔28مارچ۔2010ء) راولاکوٹ آزاد کشمیر میں بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ کے خلاف دوسرے روز بھی مکمل شٹر ڈاون اور پہیہ جام ہڑتال رہی، احتجاجی ریلی نکالی گئی۔انجمن تاجران اور ٹرانسپورٹ ورکر یونین کے اپیل کی جانے والی ہڑتال کے باعث تمام بازار ،مارکیٹیں اور دکانیں بند ہیں جبکہ سڑکوں سے ٹرانسپورٹ مکمل طور پر غائب ہے۔گزشتہ روز ہونے والے پرتشدد احتجاج کے پیش نظر کسی بھی ناخوشگوار صورتحال سے نمٹنے کیلئے شہر بھر میں پولیس کی بھارت نفری تعینات کی گئی ۔راولاکوٹ سے راولپنڈی ،مظفرآباد ، ہجیرہ اور دیگر علاقوں کیلئے چلنے والی گاڑیاں بند ہونے کی وجہ سے مسافروں کو سخت پریشانی کا سامنا ہے۔ اور لوگ کئی کئی میل پیدل سفر کرنے پرمجبور ہیں۔ لوڈشیڈنگ اورپولیس تشدد کے خلاف دوسرے بھی شہر میں بڑی احتجاجی ریلی نکالی گئی تاہم اس دوران کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا۔ انجمن تاجران اور ٹرانسپورٹرز کا کہنا ہے کہ لوڈ شیڈنگ ختم ہونے تک ہڑتال جاری رہے گی۔ ہفتے کو پولیس اور مظاہرین کے درمیان تصادم میں درجنوں افراد زخمی ہو گئے تھے۔

28/03/2010 18:35:02 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے