اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

پشاورسمیت سرحدبھر میں بجلی کی غیراعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ، سولہ سے اٹھارہ گھنٹے بجلی بندش سے عوام پریشان ،احتجاجی مظاہروں کاسلسلہ بھی شروع ہوگیا:
پشاور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین ۔12 اپریل ۔2010ء)ملک کے دیگرحصوں کی طرح پشاورسمیت سرحدبھر میں بجلی کی غیراعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ کاسلسلہ بدستوری جاری ہے۔بجلی کی مسلسل بندش سے تنگ شہریوں نے شدید احتجاج کرکے مختلف علاقوں میں احتجاجی مظاہرے بھی کئے اورحکومت سے پرزورمطالبہ کیاہے کہ اس اہم مسئلے کے حل کیلئے پوری اقدامات اٹھائے جائے۔پیر کے روز پشاورکے مختلف علاقوں میں بجلی کی مسلسل بندش کے باعث شہریوں کوشدید مشکلات کاسامنا کرنا پڑاجس کے باعث احتجاجی مظاہروں کاسلسلہ بھی شروع کیا ہے صوبائی دارلحکومت پشاورسمیت دیگرمضافاتی علاقوں میں سولہ سے اٹھارہ گھنٹے بجلی کی جاتی ہے جس کے باعث کاروبارزندگی مفلوج ہوکررہ گئی ہے جبکہ گھروں اورمسجدوں میں پانی کی شدید قلت پیداہوگئی ہیں ادھر طلباء کوبھی شدیدپریشانی کاسامنا ہے کیونکہ دن رات کے مختلف میں مسلسل تین سے چارگھنٹے تک بجلی جاتی ہے اسی طرح مضافاتی علاقوں میں بھی اٹھارہ گھنٹے تک لوڈشیڈنگ کاسلسلہ جاری ہے۔اسی طرح مردان ،چارسدہ ،نوشہرہ ،سخاکوٹ ،ملاکنڈ،کاٹلنگ ،دیر ،کرک،ڈی آئی خان ،لکی مروت ،کوہاٹ ،بنوں سمیت دیگر کئی علاقوں میں بھی ناروالوڈشیڈنگ کاسلسلہ جاری ہے۔

12/04/2010 18:03:44 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے