اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

ملک بھر میں بجلی کا شارٹ فال 3067 میگاواٹ ہو گیا، بدستور لوڈشیڈنگ جاری:
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔3 جون۔2010ء) ملک میں بجلی کا شارٹ فال تین ہزار سڑسٹھ میگاواٹ ہوگیا ہے۔ جس سے بڑے شہروں میں چھ سے آٹھ جبکہ بڑے شہروں اور دیہات میں دس سے گیارہ گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے. پاکستان الیکٹرک پاور کمپنی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ بجلی کی پیداوار بارہ ہزار پانچ سو اٹھتر اور طلب پندرہ ہزار چھ سو پینتالیس میگاواٹ ہے۔ کے ای ایس سی کو پانچ سو ستر میگا واٹ بجلی فراہم کی جا رہی ہے۔ پیپکو کا کہنا ہے کہ نیشنل گرڈ کو ہائیڈل پاور پراجیکٹ سے چار ہزار چھ سو تراسی، تھرمل پاورز سے دوہزارچارسو بیس، آئی پی پیز سے پانچ ہزار تین سو اٹھاون جبکہ رینٹل پاور پراجیکٹس سے ایک سو سترہ میگا واٹ بجلی مل رہی ہے۔ ادھر بلوچستان میں دارالحکومت کوئٹہ میں چھ سے آٹھ گھنٹے، ضلعی ہیڈکوارٹرز میں بارہ سے چودہ جبکہ دیہی علاقوں میں سولہ سے بیس گھنٹے لوڈشیڈنگ جاری ہے۔،لوڈشیڈنگ کے باعث صوبے کے مختلف علاقوں میں ہزاروں ٹیوب ویل بند ہونے سے فصلوں کو نقصان پہنچا ہے جبکہ باغات خشک ہونے اندیشہ ہے۔

03/06/2010 13:26:26 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے