اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

ملک میں بجلی کا شاٹ فال چار ہزار چھ سو پانچ میگا واٹ ہو گیا:
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین ۔25مارچ۔ 2010ء) ملک میں بجلی کا شاٹ فال چار ہزار چھ سو پانچ میگاواٹ ہوگیا ہے۔ بجلی کی پیداوار دس ہزار ایک سو اسی میگاواٹ جبکہ طلب چودہ ہزار سات سو پچاسی میگاواٹ ہے جس کے باعث شہری علاقوں میں دس سے چودہ گھنٹے جبکہ چھوٹے شہروں اور دیہات میں سولہ گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے۔ لوڈشیڈنگ کی وجہ سے عوام کی مشکلات میں اضافہ ہوگیاہے اور نظام زندگی مفلو ج ہوکر رہ گیا ہے۔ پیپکو نے ساری صورتحال سے عوام کو آگاہ رکھنے کیلئے واپڈا ہاوٴس لاہور میں ہنگامی وار روم قائم کردیاہے جس میں روزانہ ہنگامی بنیادوں پر بجلی کی صورتحال سے میڈیاکو آگاہ کیاجائے گا۔ ڈی جی پیپکو انجینئر محمد خالد کاکہناہے کہ دریاوٴں میں پانی کے بہاوٴ میں اضافہ ہونے اور سالانہ مرمت کیلئے بند تھرمل یونٹ کی پیداوار شروع ہونے سے اپریل میں صورتحال بہتر ہوناشروع ہوجائے گی۔ دوسری جانب کوئٹہ اور بلوچستان کے بیشتر علاقوں میں طویل لوڈشیڈنگ کے باعث معمولات زندگی متاثر ہوئے ہیں جس کے خلاف مختلف شہروں میں احتجاج اور مظاہروں کا سلسلہ بھی شروع ہوگیا ہے ۔

25/03/2010 13:24:50 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے