اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"کیری لوگر بل" پر مزید کوریج

کیری لوگر بِل موجودہ اسمبلی کیلئے ایک کڑا امتحان ہے، محمد اسلم کھرل:
رینالہ خورد (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔12 اکتوبر ۔2009ء) سابق وفاقی پارلیمانی سیکرٹری و مسلم لیگ (ق) ضلع اوکاڑہ کے صدر رائے محمد اَسلم کھرل نے کہا ہے کہ کیری لوگر بِل موجودہ اَسمبلی کے لئے ایک کڑا امتحان ہے جس سے پارلیمنٹ کی بآلادستی کھل کر سامنے آجائیگی۔حکمران کیری لوگر بل کو دوام بخشنے کی کوشش کررہے ہیں جبکہ قوم اِسے رَد کر چکی ہے ۔ اِن خیالات کا اِظہار اُنہوں نے اپنی رہائش گاہ پر صحافیوں سے بات چیت کے دَوران کیا۔ رائے محمد اَسلم کھرل نے کہا کہ موجودہ حکومت ڈالروں کے عوض بیرونی طاقتوں کو پاکستان کے اَندرونی معاملات میں مداخلت کا موقع فراہم کرنے کے دَر پے ہیں۔ کیری لوگر بل دراَصل پاکستان کی خودمختاری اور سلامتی کے خلاف ہے جس پر جتنا بھی احتجاج کیا جائے وہ کم ہے ۔ اِس بل کی وجہ سے بھارت کے موٴقف کو پذیرائی ملی ہے جبکہ ہمارا موٴقف یکسر نظر اَنداز کرکے ہمیں زیرنگیں رکھنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ حکومت چاہے جو بھی تاویلیں پیش کرے ، ہماری عوام اِس معاملہ پر اُن کی کوئی دلیل تسلیم کرنے کو تیار نہیں ہے کیونکہ ہم کسی بھی بیرونی طاقت کو اپنے اَندرونی معاملات میں مداخلت کی کھلی اِجازت ہرگز نہیں دے سکتے ۔ اَمریکہ کو دھشت گردی کے خلاف جنگ میں اگر ہمیں واقعی مضبوط بنانا درکار ہے تو وہ غیر مشروط طور پر ہماری بھرپور معاشی امداد کرے تاکہ ہم خوشحال ہوکر دھشت گردوں کا موٴثر اَنداز میں قلع قمع کرسکیں۔ موجودہ حالات میں پاکستان کو دھشت گردی کے حوالہ سے جتنی خطرہ ہے اُ س سے کہیں زیادہ عالمی طاقتوں کو بھی ہے ۔ ہم اِس مسئلہ میں صرف اپنے تحفظ کو ہی یقینی نہیں بنا رہے بلکہ اُن کے وجود کو بھی خطرات سے پاک کرنے کی کوشش کررہے ہیں جس پر اُنہیں ہروقت ہمارا شکرگزار ہونا چاہئے نہ کہ ہمیں زنجیروں میں جکڑ کر غلامی کی طرف دھکیلنا چاہئیے ۔

12/10/2009 16:07:19 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے