اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

بلوچستان میں لوڈشیڈنگ کیخلاف احتجاج، شاہراہیں بند:
کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔10مئی۔2010ء) بلوچستان میں بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ کے خلاف زمینداروں کا احتجاج جاری ہے۔ بلوچستان کو سندھ اور پنجاب سے ملانے والی قومی شاہراہیں مختلف مقامات پر بند کردی گئیں جبک چمن میں مسافر ٹرین کو بھی روک لیا گیا۔ صوبے میں اٹھارہ سے بائیس گھنٹوں کی لوڈشیڈنگ کے خلاف زمیندار ایکشن کمیٹی کی کال پر کوئٹہ سمیت صوبے کے مختلف علاقوں میں زمینداروں نے احتجاج کیا۔ مشتعل افراد نے کوئٹہ کے نواحی علاقوں کچلاک،لک پاس،دشت ،درینگڑھ ،پنجپائی اور کھڈ کوچہ کے علاوہ مستونگ، خضدار سمیت صوبے کے علاقوں میں سندھ اور پنجاب جانے والی قومی شاہراہیں صبح سے ہی بلاک کردیں، جس کے باعث ہزاروں گاڑیاں پھنس گئی ہیں۔ چمن پسنجر ٹرین کو بھی مظاہرین نے کچلا کے مقام پر روک لیا جس کے بعد ٹرین واپس کوئٹہ چلی گئی۔ زمیندار ایکشن کمیٹی کے ترجمان بہادر خان مشوانی کے مطابق احتجاج کے سلسلے کو توسیع دینے کے لئے کل اجلاس ہوگا۔

10/05/2010 16:12:19 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے