اگلا صفحہ پچھلا صفحہ

"بجلی کا بحران، عوام پریشان" پر مزید کوریج

پرویز مشرف کے ذمے 4 لاکھ 80 ہزار روپے وصول کر لئے گئے، وزیر پانی و بجلی:
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔12مئی۔2010ء) وفاقی وزیر پانی و بجلی راجہ پرویز اشرف نے قومی اسمبلی کو تحریری طور پر بتایا ہے کہ سابق صدر پرویز مشرف کو کوئی رعایتی بجلی فراہم نہیں کی گئی اور ان کے ذمے 4 لاکھ 80 ہزار روپے وصول کر لئے گئے ہیں۔ بدھ کو پروین مسعود بھٹی کے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے ایوان کو بتایا کہ سابق صدر پاکستان جنرل (ر) پرویز مشرف سے ان کے اسلام آباد کے فارم ہاؤس میں 1350 روپے ماہانہ کی شرح سے کبھی بھی بجلی کا بل وصول نہیں کیا گیا تاہم ان سے کنکشن کے واجبات D-2 ٹیرف کے تحت وصول کئے گئے تھے جو زرعی ٹیوب ویل پر قابل اطلاق ہے تاہم فارم ہاؤس میں مکان کی تعمیر کے بعد A-1 (B) ٹیرف جو گھریلو صارفین کے لئے مخصوص ہے وصول کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ زرعی کنکشن کی گھریلو کنکشن میں تبدیلی کے اس عرصے میں ٹیرف کا فرق جو 43 لاکھ 80 ہزار 910 روپے بنتا تھا وصول کر لیا گیا ہے۔

12/05/2010 19:45:57 : وقت اشاعت
پچھلی خبر مركزی صفحہ اگلی خبر
تمام خبریں
یہ صفحہ اپنے احباب کو بھیجئیے
محفوظ کیجئے
پرنٹ کیجئے